For Ladies Only: Mein Aik Mian Honh صرف خواتین کے لیے۔ میں ایک میاں ہوں

صرف خواتین کے لیے For Ladies Only
میں ایک میاں ہوں
پطرس
میں ایک میاں ہوں، ایک مسحورکن اردو رومانوی مزاح پارہ ہے۔ اسے پیرسید احمد شاہ بخاری پطرس نے 1927 میں تخلیق کیا، اور مضامین پطرس کا ایک حصہ ہے۔ یہ مضمون اردو دانوں میں نسل در نسل ایک سدابہار غنچہ کی حیثیت رکھتا ہے۔

This is one of the most enchanting Romantic Humor, Urdu classic literature. ” I am a husband”, by Pir Syed Ahmed Shah Bokhari Patras, published in 1927, continues to cast its evergreen spell on the Urdu lovers.

 

 

 

 

 

دسمبر 5 کو پطرس کی برسی ہوتی ہے۔ وہ 1 اکتوبر 1898 میں پشاور میں پیدا ہوئے، اور 5 دسمبر 1958 کو نیویارک میں انتقال کیا۔

December 5, marks Patras’s death anniversay. ( Born in Peshawar 1 October 1898, Died in New York 5 December 1958.)

پطرس نے ایک محدود مقدار میں لکھا، مگر اپنی اوائل جوانی میں لکھے مضامین پطرس اردو ادب کے خزانہ میں زروجواہر کی حیثیت رکھتے ہیں۔
Patras wrote little in the terms of volume, but his Mazameen e Patras are jewels of wit and humour. And he wrote them while still young.

بعد میں پطرس نے اقوام متحدہ میں پاکستان کی نمائندگی کی، اور حقوق انسانی کے لیے کام کرتے ہوئے یونی سیف کے قیام میں اہم کردار ادا کیا۔
Later Patras represented Pakistan at UN, and was instrumental in the formation of UNICEF.

انہیں بعد از مرگ ہلال امتیاز سے نوازا گیا۔
He was awarded, a post humous, Hilal e Imtiaz.

جستجو ٹی وی نہایت ہی مُسرّت سے ایک دل چسپ اقتباس پیش کررہا ہے، جسے ساز و آواز سے سجایا گیا ہے۔ یہ امّید کی جاتی ہے کہ دنیا بھر میں محبّان اردو کی سماعتوں میں یہ قبولیت حاصل کرے گا۔
JustujuTv proudly presents an excerpt, studded with sight and sound. We hope that it would capture the attention of all Urdu lovers all over the world, and would be heard even by those who are unable to read Urdu for any reasons.

جستجو ٹی وی کی وڈیو کتابیں دنیا بھر میں ان سامعین و قارئین کے لیے پیش کی جارہی ہیں جو اردو میں دل چسپی رکھتے ہیں۔
JustujuTv Video Books are aimed at the International Audience interested in Urdu.

جستجو ٹی وی آپ سے درخواست کرتا ہے کہ آپ اسے اپنے عزیزوں اور دوستوں سے شیئرکریں۔
JustujuTv requests you to please share it with your friends and family.

جستجو ٹی وی: زندگی کے تمام رنگ، ہر راہ گزرسے آگے
JustujuTv: All Colors of Life. Beyond All Dimensions

YouTube.Com/JustujuTv
JustujuTv@gmail.com

JustujuTv 2011-012-For LADIES only Mein Aik Mian Honh میں ایک میاں ہوں

Magician Terrorists in Karachi کراچی کے جادوگر دہشت گرد

کراچی میں دہشت گردی پر واویلا مچایا جارہا ہے۔
دہشت گرد جادوئی ٹوپی پہنے، ہماری اور آپ کی نظروں سے بچ نکلتے ہیں۔
مگر کیمرے کی آنکھ کچھ اور ہی کہتی ہے۔ کیونکہ وہ ہماری پولیس اور رینجرز کے عقل و شعور سے پیدل ہے۔

Best Friend + Living Legend – Himayat Alis Shayer حمایت علی شاعر: ایک بہترین دوست

جناب حمایت علی شاعر ایک محبوب شخصیت کے مالک ہیں۔ وہ ایک منفرد شاعر، ایک خوب صورت اور نغمہ ریز آہنگ کی شاعری کرتے رہے ہیں۔ 1960 سے آج تک ان کے نغموں، شاعری، اور ڈراموں اور فلموں نے لاتعداد لوگوں کے دل جیتے ہیں۔

مشہور فرانسیسی فلسفی، والٹیئر، [1694-1778] کا کہنا ہے کہ میرے نزدیک اصلی شاعر وہ ہے جو روح کو چھوتا، اور اسے گداز بخشتا ہے۔ وہ مزید کہتا ہے کہ شاعری کی ایک ایسی خوبی ہے جس سے کوئی انکار نہیں کرسکتا ۔۔۔ شاعری چند الفاظ میں نثر کے مقابلہ میں زیادہ بیان کرنے کی صلاحیّت رکھتی ہے۔ چنانچہ، جناب حمایت علی شاعر صاحب کو یہ اعزاز حاصل ہے کہ انہوں نے اردو شاعری کو سہ مصرعی مختصر ترین شاعری کی نئی جہتوں سے روشناس کرایا۔ انہوں نے ایک نئی صنف اردو شاعری، ثلاثی ایجاد کی۔

Mr. Himayat Ali Shayer is a very lovable person. An Urdu poet of distinction. His melodious poetry has won him accolades, and many awards, and the hearts of his readers and listeners since early 1960s. Famous French philosopher, Voltaire (1694-1778), says that to me a real poet is who touches the soul, and gives it a spirit. Poetry is capable of describing more in a few words than the prose. So, the credit of introducing a new genre in Urdu poetry goes to Mr. Himayat Ali Shayer, who introduced “Trinity”, a 3 lined poetry form in Urdu poetry.

Breaking News: Fatima Suraiyya Bajiya in a fight with a Cancer remission ..

World famous, Pride of Performance and Japanese Imperial Award recipient, Ms. Fatima Suraiyya Bajiya, born 1930, is seriously ill. She is fighting against an old throat cancer remission, which had been successfully treated in the past.

Here is a short program paying tributes to this amazing lady and living legend.

Managing Pakistan: National Values … Episode II

A nation, like a business unit, cannot progress and earn a goodwill, without a set of fine values. The founder of Pakistan, Mohammad Ali Jinnah, outlined 3 core values. JustujuTv is highlighting this management and educational aspect in a series of talks with Pakistani intellectuals. Here Editor In-Chief, Daily Jasarat, Mr. Athar Hashmi is enlightening us.

Managing Pakistan: National Values – Unity, Discipline, Faith + + +

The world and its components, the countries and territories, require a management of its resources, its people, and follow a set of laws and practices to remain a peaceful and dignified country. Thus it requires a Vision, a Mission, and a set of Values to abide by to progress. Both in terms of Morals, and Economics.